Monday, December 22, 2014

موبائل فون کی بیٹری میں دھماکا، ایک شخص ہلاک




بعض اوقات ٹیکنالوجی کا ذرا سا غلط استعمال انسان کو موت کے منہ میں دھکیل دیتا ہے اور کچھ ایسا بھارتی ریاست راجستھان میں ہوا جہاں ایک شخص اس وقت جان کی بازی ہار گیا جب فون کو چارجنگ کے دوران استعمال کررہا تھا کہ اچانک اس کی بیٹری زور دار دھماکے سے پھٹ گئی۔
بھارتی میڈیا کے مطابق راجستھان کے علاقے بنڈی میں راجول گرجار نامی چارجنگ پر لگے موبائل فون پر گفتگو کررہا تھا کہ اس کی کال کے دوران ہی موبائل کی بیٹری زور دار دھماکے سے پھٹ گئی جس کے نتیجے میں اس کا ہاتھ اور سینہ بری طرح جھلس گئے اور وہ اسپتال میں دوران علاج زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسا۔ ڈاکٹر کا کہنا ہے راجول کی موت کی ایک وجہ اس کے سینے اور ہاتھوں کا بری طرح جھلسنا ہے جبکہ شدید

Sunday, December 21, 2014

کیا آپکومعلوم ہے۔۔۔۔۔۔ کہاں کیا پابند ی ہے؟



دنیا کے اکثر ممالک میں تو ایسی ایسی چیزوں پر پابندی عائد ہوجاتی ہیں جو حیران کن نہیں بلکہ ہوش اڑا دینے والی ہوتی ہیں۔یقین نہیں آتا چلیں یہ فہرست آپ کو شرطیہ حیران کرکے رکھ دے گی اور ان ممالک میں جانے کا موقع ملے تو ان اشیاء سے گریز ہی آپ کے حق میں بہتر ثابت ہوگا۔

فرانس۔۔۔۔۔ پیرس کو شہر محبت قرار دیا جاتا ہے اور اس کی جان ایفل ٹاور ہے جہاں کی تصاویر اتارنا سیاحوں کا پسندیدہ مشغلہ ہوتا ہے خاص طور پر رات کے وقت اس کی فوٹوگرافی کمال کی ہوتی ہے مگر اب اگر آپ نے ایسا کرنے کی کوشش کی تو آپ کو جرمانے کی سزا کا سامنا ہوسکتا ہے کیونکہ اب پیرس انتظامیہ نے دنیا کے اس مقبول ترین مقام پر رات کو جگمگانے والی روشنیوں کو کاپی رائٹس کے تحت قرار دے دیا ہے جن کی تصاویر اتارنا قابل تعزیر جرم ہے۔
جاپان ۔۔۔۔۔جاپان دنیا کے ترقی یافتہ ممالک میں سے ایک ہے مگروہاں کے کلبز میں رقص پر پابندی عائد ہے اور یہ 1948 میں منظور ہونے والے ایک قانون کے تحت عائد ہوئی تھی جس کا مقصد عوامی اخلاق کا تحفظ ہے اور عوامی

چین کاکرنسی نوٹ جلا کر بجلی پیدا کرنے کا فیصلہ


بیجنگ: چین کی ایک مقامی کمپنی نے  کوئلے کی بجائے کرنسی نوٹوں کے ذریعے بجلی پیدا کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔
چین کی سرکاری خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق صوبہ ہینان کے علاقے لیویانگ میں بجلی پیدا کرنے والی ایک کمپنی بجلی کی پیداوار کے لئے ناقابل استعمال کرنسی نوٹ استعمال کرے گی کیونکہ کوئلے کے برعکس کرنسی نوٹوں سے بجلی تیار کرنا زیادہ ماحول دوست ہے اور ایک ٹن ناکارہ کرنسی نوٹوں کی مدد سے 600 کلو واٹ بجلی تیار کی جا سکتی ہے۔ صوبے میں ناقابل استعمال یا ناکارہ کرنسی کی مدد سے ہر سال 13 لاکھ 20 ہزار کلوواٹ بجلی پیدا کی جا سکے گی جب کہ اتنی بجلی پیدا کرنے کے لئے 4 ہزار